اتحادی جماعتوں کیساتھ مشاورتی اجلاس کا مقصد مختلف قانونی بلوں میں تجویز کردہ ترامیم کے حوالے سے اعتماد میں لینا تھا۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی (سٹاف رپورٹ،تازہ اخبار،پاک نیوز پوائنٹ ) منگل کو مشاورتی اجلاس کے بعد پارلیمنٹ ہاؤس میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ اجلاس کا مقصد اتحادی جماعتوں کے اراکین کو، عوامی فلاح و بہود کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے، مختلف قانونی بلوں میں تجویز کردہ ترامیم کے حوالے سے اعتماد میں لینا تھا۔اس حوالے سے معزز اراکین کو آگاہ کیا گیا ان کی آراء کو سنا گیا تاکہ ان کے علم میں ہو کہ ان بلوں میں عوامی فلاح کے کون سے عوامل مضمر ہیں۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ان بلز میں وزارت داخلہ، وزارت تعلیم، وزارت بحری امور، وزارتِ قانون و انصاف، وزارتِ موسمیاتی تبدیلی سمیت مختلف وزارتوں کے بلز شامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ آج ہم نے اپنے اتحادیوں کو بریفنگ دی اور ان کو ڈیماسٹریشن بھی دی تاکہ انہیں مکمل اعتماد حاصل ہو،ہمارا مقصد شفافیت ہے تاکہ ملک میں انتخابات کا ایسا نظام رائج ہو جس کی شفافیت پر سب کو مکمل اعتماد ہو۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کچھ دوستوں نے ہماری بریفنگ کو سننے کے بعد اپنی قیادت سے مشاورت کرنے کے بعد مطلع کرنے کا کہا،اتحادی اراکین کی اکثریت کا ردعمل مثبت تھا۔ 248

اتحادی جماعتوں کیساتھ مشاورتی اجلاس کا مقصد مختلف قانونی بلوں میں تجویز کردہ ترامیم کے حوالے سے اعتماد میں لینا تھا۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی

(سٹاف رپورٹ،تازہ اخبار،پاک نیوز پوائنٹ )

منگل کو مشاورتی اجلاس کے بعد پارلیمنٹ ہاؤس میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ اجلاس کا مقصد اتحادی جماعتوں کے اراکین کو، عوامی فلاح و بہود کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے، مختلف قانونی بلوں میں تجویز کردہ ترامیم کے حوالے سے اعتماد میں لینا تھا۔اس حوالے سے معزز اراکین کو آگاہ کیا گیا ان کی آراء کو سنا گیا تاکہ ان کے علم میں ہو کہ ان بلوں میں عوامی فلاح کے کون سے عوامل مضمر ہیں۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ان بلز میں وزارت داخلہ، وزارت تعلیم، وزارت بحری امور، وزارتِ قانون و انصاف، وزارتِ موسمیاتی تبدیلی سمیت مختلف وزارتوں کے بلز شامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ آج ہم نے اپنے اتحادیوں کو بریفنگ دی اور ان کو ڈیماسٹریشن بھی دی تاکہ انہیں مکمل اعتماد حاصل ہو،ہمارا مقصد شفافیت ہے تاکہ ملک میں انتخابات کا ایسا نظام رائج ہو جس کی شفافیت پر سب کو مکمل اعتماد ہو۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کچھ دوستوں نے ہماری بریفنگ کو سننے کے بعد اپنی قیادت سے مشاورت کرنے کے بعد مطلع کرنے کا کہا،اتحادی اراکین کی اکثریت کا ردعمل مثبت تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں