In Quetta, a female police officer was fired for making the accused dance naked 225

کوئٹہ میں ملزمہ کو برہنہ کرکے رقص کرانے پر خاتون پولیس آفیسر برطرف

(سٹاف رپورٹ،تازہ اخبار،پاک نیوز پوائنٹ )

ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس کوئٹہ محمد اظہر اکرم کے مطابق لیڈی انسپکٹر نے ایک قتل کیس کی تفتیش میں اختیارات کا ناجائز استعمال کیا اور دوران ریمانڈ ملزمہ کو بےلباس کرکے ڈانس پرمجبور کیا۔
ڈی آئی جی نے بتایا کہ جبری ریٹائرلیڈی انسپکٹرکو صفائی کا بھرپورموقع دیا لیکن وہ دفاع میں ناکام رہی۔
لیڈی انسپکٹر شبانہ ارشاد کو ملازمت سے جبری ریٹائر کا آرڈر بھی جاری کردیا گیا ہے۔
حکام نے بتایا کہ قتل کیس میں خاتون ملزم تھی،اس لیےتفتیش لیڈی انسپکٹرکےسپرد کی گئی تھی۔
ڈپٹی انسپکٹر جنرل کوئٹہ اظہر اکرم کے دستخط سے جمعرات کو جاری کیے گئے حکم نامے کے مطابق ستمبر 2020ء میں 13 روزہ ریمانڈ کے دوران لیڈی انسپکٹر اور ان کے ماتحت عملے نے زیرِحراست ملزمہ کے ساتھ غیر پیشہ ورانہ اورغیر اخلاقی رویے کا مظاہرہ کیا۔
خاتون قیدی کو کپڑے اتار کر اس سے ایک سندھی گانے پر رقص کرا کر ویڈیو بنائی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں