Prime Minister Imran Khan chaired a high-level review meeting on the progress of the establishment 295

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت ملک میں اسپیشل ٹیکنالوجی زونز کے قیام کے حوالے سے پیش رفت پر اعلیٰ سطحی جائزہ اجلاس

(سٹاف رپورٹ،تازہ اخبار،پاک نیوز پوائنٹ )

اجلاس میں وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سینٹر سید شبلی فراز، وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید، معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل، وزیر برائے اآئی ٹی خیبرپختونخواہ عاطف خان، صوبائی وزیر برائے صنعت بلوچستان حاجی محمد خان طور، صوبائی وزیر برائے آئی ٹی پنجاب ہمایوں یاسر و دیگر سینئر افسران شریک جبکہ وزیرِ اعظم آزاد جموں و کشمیر ، وزیر اعلی پنجاب، وزیرِ اعلیٰ بلوچستان اور دیگر صوبوں کے نمائندگان کی ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت
چئیرمین اسپیشل ٹیکنالوجی زونز اتھارٹی عامر ہاشمی نے اجلاس کو ملک میں مختلف اسپیشل ٹیکنالوجی زونز کے قیام اور ان زونز میں سرمایہ کاروں کو میسر سہولیات اور مراعات پر تفصیلی بریفنگ دی۔
اجلاس کو بتایا گیا کہ ملک میں قائم ہونے والے اسپیشل ٹیکنالوجی زونز کا مقصد ٹیکنالوجی ٹرانسفر، غیر ملکی سرمایہ کاری، افرادی قوت کا فروغ، ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ، نوکریوں کے مواقع پیدا کرنا اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں برآمدات کو بڑھاتے ہوئے درآمدت کا متبادل پیدا کرنا ہے۔
شرکاء کو اسپیشل ٹیکنالوجی زونز میں سرمایہ کاروں کو وفاقی حکومت کی جانب سے فراہم کردہ مراعات و سہولیات کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ وزیرِ اعظم عمران خان نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں ٹیکنالوجی کا فروغ ، تعلیمی اداروں، صنعتی شعبے اور حکومتی اداروں کی مضبوط پارٹنرشپ کا قیام اور نوجوانوں کو اپنی صلاحیتیں اجاگر کرنے کے لئے موافق فضا کی فراہمی حکومت کی اولین ترجیح ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اسپیشل ٹیکنالوجی زونز کے حوالے سے سرمایہ کاروں اور کاروباری برادری کو ہر وہ سہولت فراہم کر رہی ہے جو دنیا کے کسی بھی ملک میں میسر آتی ہیں۔وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ کاروباری برادری کی سہولت کے لئے ون ونڈو آپریشنز کو یقینی بنایا جائے تاکہ ان کو کسی بھی قسم کی دقتت سے بچایا جا سکے۔وزیرِ اعظم نے صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ اکتوبر کے مہینے میں دبئی میں منعقد ہونے والی بین الاقوامی ایکسپو جیسے موقع کا بھرپور فائدہ اٹھایا جائے اور ملک کے اسپشل ٹیکنالوجی زونز میں میسر مواقع کو عالمی سطح پر اجاگر کیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں