Federal Information Minister Fawad Chaudhry 193

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ہے جس میں وہ نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کے حوالے سے بات کررہے ہیں.جس میں وہ کہہ رہے ہیں کہ ہمیں تو اصل غصہ ہی نیوزی لینڈ پر تھا، انڈیا تو ویسے ہی بیچ میں آگیا تھا.

(سٹاف رپورٹ ،تازہ اخبار ،پاک نیوز پوائنٹ)
بعد ازاں اپنے بیان میں وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے پاکستان ٹیم کو مبارکباد دی اور کہا کہ کامیابی سے ثابت ہوا کامیابی ٹیم ورک سے ملتی ہے،شکریہ ٹیم پاکستان آپ کی کامیابیاں کروڑوں لوگوں کو خوشیاں دیتی ہیں، پاکستان انشاء اللہ ورلڈ چمپئن بنے گا. جبکہ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے پاکستان کرکٹ ٹیم کے ورلڈکپ جیتنے کی پیشگوئی کردی.


چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے نیوزی لینڈ کے خلاف میچ سے قبل قومی ٹیم کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ پہلے ہی کہہ چکا ہوں کہ ان شا اللّٰہ پاکستان سرخرو ہوگا۔ خیال رہے کہ پاکستان نے ورلڈ کپ کے پہلے میچ میں پاکستان نے بھارت کو 10 وکٹوں کے یکطرفہ شکست دی تھی جبکہ دوسرے میچ میں سنسنی خیز مقابلے کے بعد نیوزی لینڈ کو بھی 5 وکٹوں سے ہرادیا.
دبئی میں کھیلے گئے آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے میچ میں حارث رؤف کی عمدہ بولنگ کی بدولت نیوزی لینڈ کی ٹیم مقررہ 20 اوورز میں 8 وکٹ کے نقصان پر 134 رنز بناسکی جس کے جواب میں پاکستان نے آصف علی کی جارحانہ بلے بازی کی بدولت ایک اوور پہلے ہی مطلوبہ ہدف حاصل کرلیا۔ پاکستان کی جانب سے کپتان بابراعظم اور محمد رضوان نے اننگز کا آغاز کیا تاہم پچھلے میچ کے برعکس بابراعظم اس بار صرف 9 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے جس کے بعد فخرزمان بیٹنگ کے لیے آئے اور 11 رنز ہی بناسکے، محمد حفیظ بھی 11 رنز بناکر آؤٹ ہوئے.
محمد رضوان بھی 33 رنز پر ہمت ہار بیٹھے اور عماد وسیم 11 رنز بنانے کے بعد پویلین واپس لوٹے تاہم شعیب ملک نےذمہ داری کا مظاہرہ کیا اور آخر میں آصف علی نے جارحانہ بلے بازی کرتے ہوئے گراؤنڈ میں چھکوں کی برسات کردی۔ شعیب ملک اور آصف علی 27،27 رنز پر ناقابل شکست رہے۔ اس سے قبل پاکستان کے کپتان بابراعظم نے ٹاس جیت کر نیوزی لینڈ کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔
نیوزی لینڈ کی جانب سے مارٹن گپٹل ڈیرل مچل نے اننگز کا آغاز کیا، گپٹل 17 رنز بنانے کے بعد حارث رؤف کا شکار بنے اور مچل 27 رنز بنانے کے بعد پویلین واپس لوٹے جب کہ جمی نیشام صرف ایک رنز کے مہمان ثابت ہوئے۔ کپتان کین ولیمسن نے ڈیوڈ کونوے کے ساتھ اسکور بورڈ کو آگے بڑھانا شروع کیا تاہم 25 رنز بنانے کے بعد حسن علی نے انہیں اپنی ہی گیند پر رن آؤٹ کردیا اور ڈیوڈ کونوے بھی 27 رنز پر ہمت ہارگئے۔
گلین فلپس کی اننگز کا خاتمہ 13 رنز پر حارث رؤف نے کیا۔ حارث رؤف اور شاہین آفریدی نے آخری 4 اوورز میں اچھی بولنگ کا مظاہرہ کیا جس کے باعث کیویز بڑا اسکور کرنے میں ناکام رہے۔ ٹم سفرٹ بھی 8 رنز ہی بناسکے۔ پاکستان کی جانب سے حارث رؤف نے 4، شاہین آفریدی ، عماد وسیم اور محمد حفیظ نے ایک ایک وکٹ حاصل کی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں