Opposition leader Hamza Shahbaz 177

ملک کو مہنگائی ،غربت اور بیروزگاری کے علاوہ ڈینگی کے رحم و کرم پر بھی چھوڑ دیا گیا ہے۔اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز

لاہور(ایچ ایم فیاض سے)
حمزہ شہباز نے کہا کہ حکومتی اعدادوشمار کہتے ہیں کہ پنجاب سے رواں برس 24 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ اور 127 افراد جان کی بازی ہار گئے ہیں۔ اصل تصویر اس سے کہیں بھیانک ہے حکومتی ڈیٹا ناقابل اعتبار ہےجس کی تصدیق ایک حکومتی رپورٹ نے خود کی۔ ڈینگی کی پہلی وبا میں شہباز شریف کا تمسخر اڑانے والے عمران خان خیبرپختونخوا میں حملے کے موقع پر پہاڑوں پر سیر کرنے کے بہانے چھپ گئے تھے۔ بروقت اسپرے نہیں کروایا گیا ہسپتالوں میں ایک ایک بستر پر تین تین لوگ علاج کے منتظر رہے ادویات بلیک میں بکتی رہیں اور ڈینگی کا سستا ٹیسٹ مہیا نہ کرانے پر حکومت مجرمانہ غفلت کی مرتکب ہوئی ہے۔ اعلی عدلیہ کو فی الفور اس نا اہلی اور بدانتظامی کا نوٹس لے کر مجرمانہ غفلت کے مرتکب افراد سے اس عوامی مسئلہ پر جواب طلبی کرنی چاہئے اور ان کے خلاف سخت سے سخت ایکشن لینا چاہئے۔ روزانہ کی بنیاد پر اموات ، ادویات کی قلت اور ہسپتالوں میں جگہ کی کمی کی وجہ 11 کروڑ کا صوبہ نااہل وزیراعلیٰ کی جھولی میں ڈالنا ہے۔ پنجاب میں ہیلتھ ایمرجنسی عملاً نافذ کر کے حکومت پنجاب شہباز شریف ماڈل کی پیروی کرے تاکہ اس وبا پر قابو پایا جا سکے۔ تحریک انصاف کی حکومت والے صوبے خیبرپختونخوا میں بھی 10 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں۔ تاریخ کی نا اہل ترین حکومتیں وفاق اور پنجاب پر مسلط ہیں لوگ اس عذاب سے نجات چاہتے ہیں۔ عمران خان نے اس ملک سے جو کھلواڑ کیا ہے اس کا یوم حساب بھی قریب ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں