ملک کی بقاء اخلاقی اقدار کو مضبوط کرنے میں ہے. وزیرِ اعظم عمران خان 197

ملک کی بقاء اخلاقی اقدار کو مضبوط کرنے میں ہے. وزیرِ اعظم عمران خان

(سٹاف رپورٹ،تازہ اخبار،پاک نیوز پوائنٹ )

اخلاقی اقدار کی بہتری کیلئے نبی کریم ﷺ کی سیرت طیبہ راہنمائی کا بہترین ذریعہ ہے. رحمتہ اللعالمین اتھارٹی اخلاقیات کی قومی سطح پر بہتری کیلئے کلیدی اہمیت کی حامل ہے.اتھارٹی سکول، کالج، یونیورسٹی، میڈیا اور بین الاقوامی سطح پر تحقیق کے ذریعے سیرت طیبہ کے پہلوؤں کے عملی زندگی میں اطلاق کو یقینی بنانے میں معاون ثابت ہوگی. نشری مواد جیسے کہ ڈرامے، کارٹون اور فلمیں بنائی جائیں گی جن کا مقصد اپنے کلچر اور تاریخ کے بارے میں نوجوان نسل کو آگاہی دینا ہوگا.سیرت طیبہ پر ملک میں بڑے پیمانے پر کام ہو رہا ہے.اتھارٹی کا مقصد اس کام میں ربط پیدا کرکے مقامی اور بین الاقوامی کاوشوں کو ایک جگہ اکٹھا کرنا ہے.اتھارٹی فرقہ ورانہ تقسیم کو ختم کرنے میں بھی معاون ثابت ہوگی.وزیرِ اعظم عمران خان کی زیرِ صدارت رحمتہ اللعالمین اتھارٹی پر پیش رفت کا جائزہ اجلاس.
اجلاس میں وفاقی وزراء پیر نور الحق قادری، شفقت محمود، ڈاکٹر انیس احمد، صاحبزادہ سلطان احمد علی اور پروفیسر اعجاز اکرم کی شرکت. اجلاس کو رحمتہ اللعالمین اتھارٹی پر پیش رفت سے آگاہ کیا گیا. اتھارٹی کا آرڈینینس جاری ہو چکا. چھ ممبران پر مشتمل بورڈ کی صدارت وزیرِ اعظم خود کریں گے. بورڈ ممبران میں مقامی اور بین الاقوامی سطح کے محققین شامل ہونگے. ممبران کی تقرری میں میرٹ کا خاص خیال رکھا جائے. اسلامی خاندانی نظام اور اسکے معاشرے پر مثبت اثرات پر بھی تحقیق ہونی چاہیئے. وزیرِ اعظم کی ہدایت،اتھارٹی نوجوانوں کو بڑھتی ہوئی معاشرتی اور اخلاقی برائیوں جیسے کہ منشیات کے استعمال سے روکنے میں بھی معاون ثابت ہوگی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں